(۱۵)ایک جماعت ہمیشہ حق پررہے گی

۴۹۔ عن أمیر المؤمنین عمر بن الخطاب رضی اللہ تعالیٰ عنہ قال : قا ل رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم: لَا تَزَالُ طَائِفَۃٌ مِّنْ أمَّتِیْ ظَاہِرِیْنَ عَلیَ الْحَقِّ لاَیَضُرُّہُمْ مَنْ خَذَلَہُمْ وَ لَا مَنْ خَالَفَہُمْ حَتَی یَاتِیَ أمْرُ اللّٰہِ وَ ہُمْ عَلیٰ ذٰلِکَ ۔ فتاوی رضویہ ۹/۱۶۳

امیر المؤمنین حضرت عمر فاروق اعظم رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: میری امت کا ایک گرو ہ ہمیشہ حق پر رہے گا ،انکو وہ لوگ نقصان نہیں پہونچا سکیں گے جو رسواکرنا چاہیں گے ،اور نہ کسی کی مخالفت سے کوئی فرق پڑے گا یہاں تک کہ اللہ تعالیٰ کا حکم (قیامت) کی نشانیاں پوری ہوجائیں گی اور وہ اس پر قائم رہیں گے ۱۲م

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۴۹۔ الجامع الصحیح للبخاری، کتاب فرض الخمس ، ۱/۴۳۹

السنن لابی داؤد ، کتاب الجہاد، باب فی دوام الجہاد، ۱/۳۳۶

الصحیح لمسلم ، الامارۃ ، ۲/۱۴۳ ٭ تاریخ دمشق لابن عساکر، ۱/۶۵

الجامع للترمذی، الفتن ، ۲/۴۲ ٭ السنن لابن ماجہ ، المقدمۃ ، ۱/۲

الجامع الصغیر للسیوطی، ۲/۵۷۹ ٭ المسند لاحمد بن حنبل ، ۴/۱۰۴

مجمع الزوائد للہیثمی، ۲/۲۸۷ ٭ کنز العمال للمتقی،، ۳۴۵۰۱، ۱۲/۱۶۵

الشفا للقاضی، ۱/۶۵۵ ٭ المستدرک للحاکم ، الفتن ، ۴/۵۵۰

السلسلۃ الصحیحۃ للالبانی، ۲۷۰ ٭