افطار کرانے کی فضیلت

نسائی وابن خزیمہ زید بن خالد جہنی رضی اللہ عنہ، راوی ہیں کہ فرما یا: جو روزہ دار کا روزہ افطار کرائے یاغازی کا سامان کردے تواسے بھی اتنا ہی ثواب ملے گا۔ ( نسائی شریف )

میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو ! جہاں روزہ رکھنا باعث ثواب ہے وہیں پر روزہ دار کو افطار کرانا بھی ثواب ہے۔ اللہ د تو فیق دے تو ضرور روزہ افطار کرائیں اور روزہ کن چیزوں سے افطار کریں توآئیے تاجدار کائناتﷺ کاارشاد ملاحظہ فرمائیں۔

حضرت سلمان بن عامر رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا : ’’جب تم میں کوئی روزہ افطار کرے تو کھجور یا چھوہارے سے افطار کرے کہ وہ برکت ہے اور اگر نہ ملے تو پانی سے کہ وہ پاک کرنے والا ہے‘‘ (ترمذی، ابن ماجہ )

اللہ عزوجل اپنے پیارے محبوب ﷺ کے صدقہ وطفیل ہم سب کو نبیٔ کریم ﷺ کی سنتوں پر عمل کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔

آمین بجاہ النبی الکریم علیہ افضل الصلوٰۃ والتسلیم