زکوٰۃ دینا رحمت

زکوٰۃ دینے والوں کے لئے آخرت کی زندگی میں جنت کی خوش خبری ہے۔ جنت ایک ایسی جگہ ہے جہاں نہ کوئی خوف نہ کوئی غم۔ خو ف و خطرہ سے ہر طرح سے انسان آزاد اور سکون میں ہوگا۔ اور وہاں اتنی آسائشیں ہوں گی کہ انسان دنیاوی زندگی میں تصور بھی نہیں کر سکتا اور یہ عظیم مقام ان لوگوں کے لئے ہے جو لوگ اہل ایمان ہوں گے، نیک اور صالح اخلاق کے مالک ہوں گے، اور ان تمام صفات کے حامل ہوں گے جو کہ ایک مومن کے لئے ضروری ہیں، تو ایسے لوگوں کو جنت کا وارث بنا دیا جائے گا اس سے معلوم ہوا کہ زکوٰۃ دینے والوں کے لئے جنت کی وراثت ہے۔ جنت ان کے لئے ہے اور وہ جنت کے لئے۔

میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو ! فردوس جنت کا سب سے اعلیٰ درجہ ہے اور مومنین کے لئے اسی کی بشارت ہے۔ حضرت ابو ایوب رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں : کہ ایک شخص نبیٔ کریم ﷺ کے پاس آیا اور عرض کرنے لگا کہ سرکار مجھے ایسا عمل بتا دیں جو مجھے جنت میں داخل کر دے حضورﷺ نے فرمایا ’’اللہ کی عبادت کر، کسی کو اس کا شریک نہ کر، نماز قائم کر اور زکوٰۃ ادا کر ‘‘۔