۵۔ بدعت

(۱) بدعت و ضلالت

۶۷۔ عن أبی ہریرۃ رضی اللہ تعالیٰ عنہ قال: قال رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم : مَن دَعَا اِلیٰ ضَلَالَۃٍکَانَ عَلَیْہِ مِنَ الْاِثْمِ مِثْلَ آثَامِ مَنْ تَبِعَہٗ لَا یُنْقَصُ ذٰلِکَ مِنْ آثَامِہِمْ شَیْئاً ۔

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا:جو کسی امر ضلالت کی طرف بلائے تو جتنے اسکے بلانے پر چلیں ان سب کے برابر اس پر گناہ ہو اور اس سے ان کے گناہوں میں کچھ کمی نہ ہو۔

فتاوی رضویہ حصہ اول ۹/۲۱۳

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۶۷۔ الصحیح لمسلم ، العلم ، ۲/۳۴۱ ٭ السنن لابن ماجہ ، المقدمۃ ، ۱/۱۹

الجامع للترمذی، العلم ، ۲/۹۲ ٭ السن لابی داؤد ، السنۃ ، ۲/۶۳۵

المسندلاحمد بن حنبل ، ۲/۳۹۷ ٭ السنۃ لابن ابی عاصم ، ۱/۵۲