شفیع بنیں جس دن کوئی شفاعت کرنے والا ذرا بھی فائدہ نہ پہنچا سکے گا

حضرت سَواد بن قارِب رضی اللہ تعالیٰ عنہ نبی کریم صَلَّی اللّٰہُ تَعَالیٰ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کی خدمت میں ایمان لاتے ہوئے عرض کرتے ہیں : وَکُنْ لِیْ شَفِیْعًا یَوْمَ لَا ذُوْشَفَاعَۃٍ بِمُغْنٍ فَتِیْـلاً عَنْ سَوَادِ بْنِ قَارِب ۔

ترجمہ : یارسول اللہ صَلَّی اللّٰہُ تَعَالیٰ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم آپ میرے شفیع بنیں جس دن سواد بن قارب کو کوئی شفاعت کرنے والا ذرا بھی فائدہ نہ پہنچا سکے گا ۔

(مختصر سیرت رسول عربی صفحہ نمبر 69 عبداللہ بن محمد بن عبدالوہاب نجدی) ۔ (الاستیعاب فی معرفۃ الاصحاب،حرف السین،باب سواد،ترجمۃ۱۱۱۴، ج۲، ص۲۳۴۔ علمیہ)

اہم نوٹ : نجدیوں نے بغض رسول صَلَّی اللّٰہُ تَعَالیٰ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم میں مبتلا ہو کر مختصر سیرت رسول صَلَّی اللّٰہُ تَعَالیٰ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کے نئے ایڈیشن سے یہ مکمل واقعہ و عبارت نکال دی ہے اے اہلِ ایمان اِن دشمنانِ رسول صَلَّی اللّٰہُ تَعَالیٰ عَلَیْہِ وَاٰلِہٖ وَسَلَّم کو پہچانیئے یہ لوگ اپنے خود ساختہ من گھڑت عقائد کےلیئے قرآن و حدیث کے ساتھ ساتھ اپنے بڑوں کی کتابیں بھی تبدیل کر دیتے ہیں ۔ لہٰذا اہلِ اسلام سے گزارش ہے نجدی فتنہ سے بچیں ۔ (طالبِ دعا و دعا گو ڈاکٹر فیض احمد چشتی) ۔