زر خرید لونڈیاں

معاشرہ میں بڑھتی ہوئی خرابی کے اسباب تلاشے جائیں تو انصاف کی نظر سے یہ کہنا ہوگا کہ دور حاضر کی خرابیوں میں عورتوں کا حصہ زیادہ ہے،بازاری لوگوں نے عورتوں کو بازاری بنانے کے لئے آزادی کی تعلیم سکھائی اور کچھ عورتوں کو زر خرید لونڈیاں بنا کر لوگوں کو گناہوں کی دعوت دینے کے لئے سینما کے پردے اور ٹیلیویژن کی اسکرین پر لاکھڑا کیا،اب عریانیت والی شکل صورت کیسے اپنائی جائے اور عورت دوسروں کی نظر میں حسیں کیسے بنے اس کے طریقے ان زر خرید لونڈیوں سے پنہچائے جا رہے ہیں،سینما ہو یا ٹھیئٹر،ناٹک ہو یا ڈرامے،کھیل ہوں یا میلے سب کی بنیاد ہی عورت ہے،سب کی زینت ہی عورت ہے،سب کی جان ہی عورت ہے،عورت اس میدان سے الگ ہو جائے تو آدھی دنیا ان گناہوں میں ملوث ہونا چھوڑ دے گی،اس لئے ہمارے آقا نے فرمایا کہ عورت کا نیک عمل تو ستر صدیقوں کے برابر ہے مگر گناہ ہزار گنہگاروں کے گناہ برابر ہے،ہماری مسلمان عورتوں کو اللہ اور رسول سے محبت ہو تو ان کے فرمان پر آکر آخرت بنا لینی چاہیئے اور دائمی زندگی کی خوشگواری کا انتظام کر لینا چاہیئے،چار دنوں کی جوانی کے جوش میں اتنا مدہوش نہ ہونا چاہیئے کہ دائمی زندگی کا دائمی عیش ہمارے ہاتھوں سے نکل جائے،اور پھر جہنم کی آگ میں ہمیں جلنا پڑے،جھنم کتنی بھیانک ہے اسے اس سے سمجھا جاسکتا ہے کہ اللہ تبارک وتعالیٰ نے ارشاد فرمایا یا ایھا الذین آمنوا قوا انفسکم و اہلیکم نارا،وقودھا الناس و الحجارۃ،اے ایمان والو ! خود کو اور اپنے اھل و عیال کو آگ سے بچاوٗ جسکا ایندھن لوگ اور پتھر ہیں،اور یہ بھی سن لو اس دوزخ کو ہمنے ایمان والوں کے لئے نہیں بنایا ہے بلکہ اعدت للکافریں اسے کافروں کو لئے تیار کیا گیا ہے،کافر جائیں تم کیوں جاوٗ ؟ تمہارا ٹھکانہ جنت ہے،تمہیں معلوم ہے جنت کی راہ اللہ اور رسول کی اطاعت ہے اور جھنم کی راہ انکی نافرمانی ہے،میرے آقا ﷺ کی پیاری دیوانیو ! تم معاشرہٗ اسلامی میں بڑی گراں قدر ہو تم اپنے آپ کو صالح بنا لو اور جس نبی نے عزت عطا کی انکے دیں کی زیادہ نہیں تو گھریلو مبلغہ بن جاوٗ،تمہیں تو اللہ نے سکون و راحت کے لئے پیدا کیا،گناہوں میں سکون کہاں ؟ اپنے مقصد کی طرف پلٹ آوٗ ،عریانیت سے توبہ کرلو ،اپنے آپکو اور اپنے گھر والوں کو جنتی بنانے کے لئے کوشاں ہو جاوٗ ،اور اپنے آپ کو مثالی جنتی عورت بنا لو