سرکار دوجہاں کی بدولت ہیں بیٹیاں

نتیجہ فکر: محمد اشرف رضا اسماعیلی بستوی
گھر   کی   ہمارے  زیب   و زینت   ہیں  بیٹیاں
ہرماں  کے  دل  کی  چین  و راحت  ہیں بیٹیاں
گھر  کی   بڑھاتی   شان   و  عزت  ہیں  بیٹیاں
رکھتی ہیں نیک دل میں وہ حسرت ہیں بیٹیاں
سرکار    دو    جہاں    کی   بدولت  ہیں  بیٹیاں
اللہ      کی      کرم      و     عنایت   ہیں بیٹیاں
مایوس   جو    ہوتے   ہیں   بیٹی  کے  جنم   پر 
ان   کو   بتاؤ  رب  کی  یہ  رحمت   ہیں بیٹیاں
چھیڑوو   نہ   ان   کو  اور  ستاؤ   نہ  دوستوں
بے شک  ہمارے  گھر  کی  ضرورت   ہیں بیٹیاں
پیارے     نبی     کا    ہے   یہی   فرمان  موموں
ظالم   ہے   وہ   کہے   جو   مصیبت ہیں بیٹیاں
اشرف   اٹھا   کے   دیکھ   لو  تاریخ  ہے  شاھد
اللہ   کی    طرف    سے   یہ   نعمت ہیں بیٹیاں