(۸) گمراہ و بدعتی کی عیادت نہ کرو

۷۵۔ عن عبد اللہ بن عمر رضی اللہ تعالیٰ عنہما قال : قال رسو ل اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم : لِکُلِّ اُمَّۃٍ مَجُوْسٌ ،وَ مَجُوْسُ اُمَّتِی الذِّیْنَ یَقُولُونَ:لاَ قَدْرَ ، اِنْ مَرِضُوْا فَلاَ تَعُوْدُوْہُمْ وَ اِنْ مَاتُوا فَلاَ تَشْہَدُ وْ ہُمْ ۔ اظہا ر الحق الجلی ص ۱۸

حضرت عبداللہ بن عمر رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: ہر امت میں کچھ مجوسی ہوتے ہیں اور میری امت کے مجوسی وہ لوگ ہیں جو تقدیر کے منکر ۔ اگر بیمار پڑیں تو انہیں پوچھنے نہ جائو اور اگر مر جائیں تو انکے جنازہ پر نہ جائو۔ ۱۲م

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۷۵۔ المسندلاحمد بن حنبل ، ۲/۸۶ ٭ کنز العمال للمتقی، ۵۵۵، ۱/۱۱۸