حدیث نمبر 306

روایت ہے حضرت بلال ابن عبداﷲ ابن عمر سے ۱؎ وہ اپنے والد سے راوی فرماتے ہیں فرمایا رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وسلم نے کہ عورتوں کو ان کے مسجدوں کے حصوں سے نہ روکو جب تم سے اجازت مانگیں ۲؎ یوں بلال بولے کہ خدا کی قسم ہم تو روکیں گے۳؎ تب ان سے حضرت عبداﷲ نے کہا میں تو کہتا ہوں رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا اور تم کہتے ہو کہ ہم ان کو روکیں گے۔

شرح

۱؎ آپ عظیم الشان تابعی ہیں،مدنی ہیں،حضرت عبدا ﷲ ابن عمر کے بیٹے ہیں۔آپ سے صرف ایک حدیث مروی ہے۔

۲؎ یعنی انہیں بھی مسجدوں میں جا کر نماز پڑھنے دو تاکہ وہاں کا ثواب یہ بھی پائیں۔اس سے معلوم ہوا کہ عورت خاوند کی اجازت کے بغیر مسجد نہیں جاسکتی۔

۳؎ کیونکہ اب فتنوں کا زمانہ ہے ان کا گھروں سے نکلنا فساد سے خالی نہیں،یہ حکم حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے زمانہ کے لیے تھا۔یہی آپ کا مقصد تھا نہ کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کے فرمان کی مخالفت کہ وہ تو کفر ہے۔غالبًا یہ گفتگو اس وقت کی ہے جب جناب عمر رضی اللہ عنہ نے عورتوں کو مسجد سے روک دیا تھا۱۲