أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

وَنَادَيۡنٰهُ مِنۡ جَانِبِ الطُّوۡرِ الۡاَيۡمَنِ وَقَرَّبۡنٰهُ نَجِيًّا ۞

ترجمہ:

ہم نے انہیں طور کی دائیں جانب سے ندا کی اور ہم نے انہیں قریب کر کے راز دار بنایا

تفسیر:

حضرت موسیٰ کا مقرب ہونا 

آیت :52 میں ہے ہم نے انہیں قریب کر کے راز دار بنایا، اس سے قرب مکانی بھی مراد ہوسکتا ہے اور قرب شرف اور قرب مرتبہ بھی قرب مکانی پر یہ دلیل ہے کہ ابوالعالیہ نے کہا کہ جب تورات لکھی جا رہی تھی تو حضرت موسیٰ اس پر قلم چلنے کی آواز سنتے تھے اور قرب شرف اور قرب مرتبہ پر یہ دلیل ہے کہ اللہ تعالیٰ کے قرب سے متعارف اور متبادر قرب مرتبہ ہوتا ہے اسی اعتبار سے ملائکہ کو مقربین کہا جاتا ہے۔

تبیان القرآن – سورۃ نمبر 19 مريم آیت نمبر 52