أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

وَاِنۡ تَجۡهَرۡ بِالۡقَوۡلِ فَاِنَّهٗ يَعۡلَمُ السِّرَّ وَاَخۡفٰى ۞

ترجمہ:

اور اگر آپ بلند آواز سے بات کریں، تو بیشک وہ آہستہ اور اس سے بھی زیادہ پوشیدہ باتوں کو جانتا ہے

سر اور اخفی کا معنی 

طہ : ٧ میں ہے اگر آپ بلند آواز سے بات کریں تو بیشک وہ آہستہ اور اس سے بھی زیادہ پوشیدہ باتوں کو جانتا ہے 

اس آیت میں سر اور اخفی کے الفاظ ہیں حضرت ابن عباس (رض) نے فرمایا : انسان دوسرے شخص سے پوشیدگی میں جو بات کرے وہ سر ہے، اور انسان اپنے دل میں جو بات چھپالے اور کسی دور سے شخص کو اس پر مطلع نہ کرے وہ اخفی ہے۔ نیز حضرت ابن عباس نے فرمایا تمہارا دل میں کسی کام کا منصوبہ بنانا سر ہے اور جس کام کا تم عنقیرب اپنے دل میں منصوبہ بنائو گے وہ اخفی ہے تم یہ جانتے ہو کہ تم نے آج اپنے دل میں کیا پروگرام بنایا ہے اور تم یہ نہیں جانتے کہ تم کل اپنے دل میں کیا پروگرام بنائو گے اور اللہ تعالیٰ جانتا ہے کہ تم نے آج اپنے دل میں کیا چھپایا ہے اور تم کل اپنے دل میں کیا چھپائو گے اس لئے فرمایا وہ سر کو بھی جانتا ہے اور اخفی کو بھی جانتا ہے۔

القرآن – سورۃ نمبر 20 طه آیت نمبر 7