حج صرف اللہ کے لئے

وَ لِلّٰہِ عَلَی النَّاسِ حِجُّ البَیْتِ مَنِ اسْتَطَاعَ اِلَیْہِ سَبِیْلاً (پ؍۴ع؍۱)

اور اللہ کے لئے لوگوں پر اس گھر کاحج کرنا ہے جو اس تک چل سکے۔ (کنز الایمان)

میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو! آپ نے حج کے بیان کی ابتدا میں پڑھ لیا کہ حج کن پر فرض ہے ؟اور صاحب استطاعت کسے کہتے ہیں؟اگر کوئی صاحب استطاعت ہے اور حج کی ادائیگی کے لئے نکلتا ہے تو اسے آیت کریمہ کے پہلے لفظ کو یاد رکھنا ہے، ’’وَلِلّٰہِ‘‘حج صرف اور صرف اللہ  کی خوشنودی کے لئے ہی کیا جائے نہ شہرت کی تمنانہ لقب کی آرزو،بس ایک ہی تڑپ ہوکہ اے اللہ تیرے لئے ہی حج کر رہا ہوںانشاء اللہ اس کی برکتیں دونوں جہاں میں نظر آئیں گی۔ اللہ د ہم سب کو اس کی رضا کے لئے حج کی سعادت نصیب فرمائے۔

آمین بجاہ النبی الکریم علیہ افضل الصلوٰۃ و التسلیم