فرض حج ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ ۔ اور سوئِ خاتمہ

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے مروی ہے کہ حضورنے ارشاد فرمایا کہ جو شخص (حج فرض ہونے کے بعد) حج کئے بغیر مر جائے تو وہ چاہے تو یہودی مرے اور چاہے تو نصرانی مرے۔ (ترمذی شریف)

میرے پیارے آقا ﷺ کے پیارے دیوانو! مذکورہ حدیث شریف سے ہمیں یہ درس ملا کہ جیسے ہی حج فرض ہو جائے تواس کی ادائیگی میں تاخیر نہیں کرنی چاہئے ورنہ برے خاتمہ کا اندیشہ ہے، یہ مسئلہ ذہن میں رکھنا چاہئے کہ لڑکی یا لڑکے کی شادی کے انتظار میں حج فرض ہونے پر بھی جو لوگ حج ادا نہیں کرتے ان کو مذکورہ حدیث شریف سے سبق حاصل کرنا چاہئے۔ یاد رکھیں کہ فرض حج ادا کرنے کے لئے شادی وغیرہ کا کہیں ذکر نہیں ہے۔ لہٰذا جب حج فرض ہونے کی شرطیں پالی جائیں تو فوراََ حج اداکر لینا چاہئے۔ اللہ  ہم سب کا خاتمہ بالخیر فرمائے۔

آمین بجاہ النبی الکریم علیہ افضل الصلوٰۃ و التسلیم