أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

وَاِنَّكَ لَـتَدۡعُوۡهُمۡ اِلٰى صِرَاطٍ مُّسۡتَقِيۡمٍ ۞

ترجمہ:

اور بیشک آپ ضرور ان کو صراط مستقیم کی دعوت دیتے ہیں

تفسیر:

اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہے اور بیشک آپ ضرور انکو صراط مستقیم کی دعوت دیتے ہیں۔ اور بیشک جو لوگ آخرت پر یقین نہیں رکھتے وہ ضرور صراط مستقیم سے منحرف ہنے والے ہیں۔ اور اگر ہم ان پر (مزید) رحم کرتے اور جو تکلیف انہیں پہنچی ہے اس کو دور کردیتے تو یہ ضرور اپنی سرکشی میں بھٹکنے پر اصرار کرتے۔ اور بیشک ہم نے ان کو عذاب میں گرفتارک رلیا مگر پھر بھی یہ لوگ نہ اپنے رب کے سامنے جھکے اور نہ گڑ گڑائے۔ حتیٰ کہ جب ہم ان پر عذاب شدید کا دروازہ کھول دیں گے تو اس وقت وہ ناامید ہو کر رہ جائیں گے۔ (المومنون : ٧٧-٧٣) 

تبیان القرآن – سورۃ نمبر 23 المؤمنون آیت نمبر 73