أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

وَّزُرُوۡعٍ وَّنَخۡلٍ طَلۡعُهَا هَضِيۡمٌ‌ۚ‏ ۞

ترجمہ:

کھیتوں میں اور کھجور کے درختوں میں جن کے خوشے نرم ہیں

مشکل الفاظ کے معانی 

طلع : خوشہ گچھا ‘ گابھا ‘ کھجور کے درخت کا پہلا شگوفہ جو باہر نکلتا ہے اس کو طلع کہتے ہیں ‘

قرآن مجید میں ہے :

ترجمہ : (ق : ١٠)…اور کھجور کے بلند درخت جن کے خوشے تہ بہ تہ ہیں۔

مٹھی بھر کھجوروں کو کہتے ہیں قوس طلاع الکف۔ (المفردات ج ٢ ص ٣٩٨)

ھضیم : کمزور ‘ پتلی اور نرم چیز کو ہضیم کہتے ہیں ‘ اس کے معنی توڑنے اور کچلنے کے بھی ہیں۔ معدہ جو طعام کو کچلتا اور پیستا ہے اس کو بھی اسی اعتبار سے ہضم کرنا کہتے ہیں اور جو چیز نرم ہو وہ جلدی ہضم ہوجاتی ہے۔

(المفردات ج ٢ ص ٧٠٧‘ مطبوعہ مکتبہ نزار مصطفیٰ مکہ مکرمہ ‘ ١٤١٨ ھ)

القرآن – سورۃ نمبر 26 الشعراء آیت نمبر 148