أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

فَاَسۡقِطۡ عَلَيۡنَا كِسَفًا مِّنَ السَّمَآءِ اِنۡ كُنۡتَ مِنَ الصّٰدِقِيۡنَؕ ۞

ترجمہ:

اگر تم سچوں میں سے ہو تو ہمارے اوپر آسمان کا کوئی ٹکڑا گرا دو

اصحاب الایکہ کا اپنے انکار پر اصرار اور ان پر عذاب کا نزول 

اس کے بعد انہوں نے کہا : اگر تم سچوں میں سے ہو تو ہمارے اوپر آسمان کا کوئی ٹکرا گرا دو ۔ (الشعرائ : ١٨٧) انہوں نے یہ بات حضرت شعیب (علیہ السلام) کی تکذیب کرتے ہوئے اور ان کا مذاق اڑاتے ہوئے کہی۔

القرآن – سورۃ نمبر 26 الشعراء آیت نمبر 187