أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

تِلۡكَ اٰيٰتُ الۡـكِتٰبِ الۡمُبِيۡنِ ۞

ترجمہ:

یہ روشن کتاب کی آیتیں ہیں

سورۃ القصص کا خلاصہ 

یہ روشن کتاب کی آیتیں ہیں۔ (القصص : ٢) یعنی آپ کے قلب پر جو آیتیں نازل کی گئی ہیں یہ دنیا اور آخرت کی تمام مصلحتوں کی جامع ہیں اور ان میں احکام شرعیہ کو بیان کیا گیا ہے ‘ اور یہ سورت ان چیزوں کو بیان کرتی ہے جن میں بنو اسرائیل اختلاف کرتے تھے ‘ اور اس سورت میں حضرت موسیٰ (علیہ السلام) کے قصہ کے وہ حقائق اور دقائق بیان کیے گئے جن کو ان کے ماہرین میں سے بھی بہت کم لوگ جانتے تھے ‘ یہ سورت بیان کرتی ہے کہ فرعون اور اس کی قوم سے کس طرح انتقام لیا گیا ‘ اور قارون کو کس طرح سزا دی گئی ‘ اور حضرت موسیٰ (علیہ السلام) اور بنواسرائیل پر کیا کیا انعام کیے گئے ‘ اور اس سورت میں وہ تفصیلات بیان کی گئی ہیں ‘ جو دوسری سورتوں میں حضرت موسیٰ (علیہ السلام) کے قصہ میں بیان نہیں کی گئیں۔ قرآن مجید کی حسب ذیل سورتوں میں حضرت موسیٰ (علیہ السلام) کا ذکر کیا گیا ہے :

البقرۃ ‘ النسائ ‘ المائدہ ‘ الاانعام ‘ الاعراف ‘ الانفال ‘ یونس ‘ ھود ‘ ابراہیم ‘ النحل ‘ بنی اسرئیل ‘ الکھف ‘ مریم ‘ طٰہٰ ‘ الانبیائ ‘ المومنون ‘ الفرقان ‘ الشعرائ ‘ النمل القصص ‘ العنکبوت ‘ السجدہ ‘ الا احزاب ‘ الصّٰفّٰت ‘ المومن ‘ الزخرف ‘ الدخان ‘ الجاثیہ ‘ الذریات ‘ القمر ‘ الصّف ‘ الجمعۃ ‘ التحریم ‘ الحاقہ ‘ المزمل ‘ النزّٰعّٰت ‘ الفجر۔ قرآن مجید کی کل ٤١٥ آیتوں میں حضرت موسیٰ (علیہ السلام) کا ذکر ہے ‘ اس سے واضح ہوتا ہے کہ حضرت موسیٰ (علیہ السلام) کے اللہ تعالیٰ کے بہت لاڈلے اور محبوب نبی ہیں۔

القرآن – سورۃ نمبر 28 القصص آیت نمبر 2