حدیث نمبر 527

روایت ہے حضرت انس سے کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے ایک ماہ قنوت پڑھی پھر چھوڑ دی ۱؎(ابوداؤد)

شرح

۱؎ یعنی ساری نمازوں میں تر ک کردی۔شوافع کے ہاں اس کا مطلب یہ ہے کہ فجر کے سوا باقی چار نمازوں میں چھوڑ دی۔بہرحال چار نمازوں میں قنوت نازلہ بالاتفاق منسوخ ہے اور فجر میں اختلاف ہے،ہمارے ہاں منسوخ ہے،شوافع کے ہاں نہیں اس لیئے اگر کوئی ان چارنمازوں میں قنوت نازلہ پڑھ لے تو بالاتفاق فاسد ہوگی۔