حضور تاج الشریعہ کے عالمی دوروں کی برکت سے دین و سنیّت کو تقویت ملی

نوری مشن کے تحت منعقدہ عرس حضور تاج الشریعہ میں علمی خطاب اور لٹریچر کی تقسیم

مالیگاؤں: حضور تاج الشریعہ رحمۃ اللہ علیہ کی ذات جامع الصفات ہے۔ آپ اعلیٰ حضرت و حضور مفتی اعظم کی روحانی و علمی وراثتوں کے امین ہیں۔آپ عظیم محدث کے منصب پرفائز نظر آتے ہیں۔ آپ کی تحقیقات کا معیار بہت بلندہے۔ حضور تاج الشریعہ نے اپنا تحقیقی رسالہ ’’الصحابۃ نجوم الاھتداء‘‘ شیخ الازہر (مصر) کی خدمت میں پیش کیا ۔ اِس میں حدیث نبوی ’’الصحابی کالنجوم بایہم اقتدیتم اہتدیتم‘‘ پر تفصیلی تحقیق کی گئی ہے۔ شیخ سید محمد طنطاوی مصری نے تاج الشریعہ کے قول کی تائید کی اور اسی کو اختیار کیا، فخرِ ازہر کے تمغہ سے نوازا۔اِس طرح کا اظہارِ خیال عرس حضور تاج الشریعہ میں حضرت علامہ نورالحسن مصباحی صاحب (صدر المدرسین دارالعلوم اہلسنّت سیدنا امیر حمزہ) نے کیا۔ آپ نے کہا کہ:حضرت ابراہیم علیہ السلام کے والدتارخ ہیں یا آزر اِس موضوع پر حضور تاج الشریعہ نے ’’تحقیق ان ابا سیدنا ابراہیم علیہ السلام تارح لا آزر‘‘ کتاب تحریر فرمائی اور تفسیر و احادیث سے یہ ثابت کیا کہ آزر بت پرست چچا تھا نہ کہ والد۔ بلکہ حضرت ابراہیم علیہ السلام کے والد تارخ تھے۔ حضور تاج الشریعہ نے عقائد اہلسنّت کی ترجمانی میں درجنوں کتابیں تحریر کیں۔ آپ کا نعتیہ مجموعہ عشقِ رسولﷺ کا گنجینہ ہےاور کیف و سرور کا آبگینہ۔ازیں قبل غلام مصطفیٰ رضوی نے مفکر اسلام حضرت علامہ قمرالزماں خان اعظمی (سکریٹری جنرل ورلڈ اسلامک مشن انگلینڈ) کے برقی پیغام کو سُنایا، علامہ اعظمی نےارشاد فرمایا کہ: ’’میں نے حجاز مقدس،دُبئی، امریکہ وغیرہ ملکوں میں بارہا حضور تاج الشریعہ کی زیارت کی، ملاقات سے مشرف ہوا۔ان کے دوروں کی برکت سے دین و سنیّت کو تقویت ملی۔ ہمیں ان کی تصنیفی خدمات کو اہلِ علم کے مابین منظر عام پر لانا ہوگا۔ جس کے خوشگوار نتائج رونما ہوں گے۔‘‘دوسرے عرس مبارک کی مناسبت سے حضرت علامہ محمد ارشد مصباحی(بانی و سربراہ اعلیٰ حضرت فاؤنڈیشن انٹرنیشنل یوکے) نے اپنے برقی پیغام میں فرمایا کہ: ’’حضور تاج الشریعہ نے شریعت مطہرہ کی حفاظت کا پیغام دیا ہے، ان سے عقیدت کا تقاضا ہے کہ شرعی احکام پر سختی سے عمل کیا جائے۔ دین سے اپنے رشتے مضبوط کیے جائیں۔رسول اللہ ﷺ کی عظمت کا نقش دلوں پر جمایا جائے۔آپ کی تحقیقات علمیہ سے استفادہ کیا جائے۔‘‘ان پیغامات کو نوری مشن کے توسط سے عرس کی اِس محفل میں عوام تک پہنچایا گیا۔۲۷؍ جون سنیچر کی شب یہ محفل نوری مشن نے مسجد اہلسنّت معینیہ میں منعقد کی۔ حافظ عبدالرحمٰن اشرفی کی تلاوت سے آغاز ہوا۔ یاسین رضا نے والہانہ انداز میں نعت خوانی کی۔ قُل شریف حافظ عبدالرحمٰن اشرفی نے پڑھا۔ سلام و دُعا پر محفلِ عرس کا اختتام ہوا۔پروفیسر ڈاکٹر محمد مسعود احمد نقشبندی کی کتاب ’’لباسِ حضورﷺ‘‘ (مطبوعہ نوری مشن) تقسیم کی گئی۔رپورٹ کی ترسیل فرید رضوی نے کی۔


٢٨ جون ٢٠٢٠ء