أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

وَالَّذِيۡنَ اٰمَنُوا وَعَمِلُوۡا الصّٰلِحٰتِ لَـنُبَـوِّئَنَّهُمۡ مِّنَ الۡجَـنَّةِ غُرَفًا تَجۡرِىۡ مِنۡ تَحۡتِهَا الۡاَنۡهٰرُ خٰلِدِيۡنَ فِيۡهَا ‌ؕ نِعۡمَ اَجۡرُ الۡعٰمِلِيۡنَ‌ۖ ۞

ترجمہ:

جو لوگ ایمان لائے اور انہوں نے نیک اعمال کیے ہم ان کو ضرور اس جنت کے بالا خانوں میں جگہ دیں گے جس کے نیچے سے دریا بہتے ہیں وہ ان میں ہمیشہ رہیں گے ‘ نیک عمل کرنے والوں کا کیسا اچھا اجر ہے

جنت کے بالا خانوں کا کون مستحق ہو گا 

اس کے بعد فرمایا : جو لوگ ایمان لائے اور انہوں نے نیک عمل کیے ہم ان کو ضرور اس جنت کے بالا خانوں میں جگہ دیں گے۔ (العنکبوت : ٥٨)

حضرت سہل بن سعد (رض) بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا : جنت والے اپنے اوپر بالا خانوں کے لوگوں کو اس طرح دیکھیں گے جس طرح تم لوگ آسمان میں ستاروں کو دیکھتے ہو ‘ حضرت ابو سعید نے کہا جس طرح تم آسمان کے مشرقی یا مغربی کنارے میں روشن ستارے کو دیکھتے ہو۔ ( صحیح الخاری رقم الحدیث : ٦٥٥٥‘ صحیح مسلم رقم الحدیث : ٢٨٣١)

حضرت علی (رض) بیان کرتے ہیں کہ جنت میں ایک بالا خانہ ہے اس کی ظاہری چیزیں اس کی باطنی چیزوں سے نظر آئیں گی اور اس کی باطنی چیزیں اس کی ظاہری چیزوں سے نظر آئیں گی۔ ایک اعرابی نے پوچھا یا رسول اللہ ! یہ بالا خانہ کس کے لئے ہے ؟ آپ نے فرمایا یہ بالا خانہ اس کے لئے ہے جو شیریں گفتگو کرے ‘ کھانا کھلائے ‘ ہمیشہ روزے رکھے اور رات کو اٹھ کر اللہ کے لئے نماز پڑھے جب لوگ سوئے ہوئے ہوں۔ (سنن الترمذی رقم الحدیث : ٢٥٢٧‘ مصنف ابن ابی شیبہ ج ٨ ص ٦٢٥ )

حضرت ابو سعید خدری (رض) بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا جنتی لوگ اپن اوپر بالا خانے کو اس طرح دیکھیں گے جس طرح تم آسمان کے مشرقی یا مغربی کننرے میں دور سے چمکتے ہوئے ستارے کو دیکھتے ہو ‘ کیونکہ بعض کے درجات بعض سے زائد ہیں ‘ صحابہ نے عرض کیا : یارسول اللہ کیا وہ انبیاء کے درجات ہوں گے ؟ جن تک کوئی اور نہیں پہنچ سکتا ؟ آپ نے فرمایا کیوں نہیں ! اس ذات کی قسم جس کے قبضہ وقدرت میں میری جان ہے ‘ یہ وہ لوگ ہیں جو اللہ پر ایمان لائے اور انہوں نے رسولوں کی تصدیق کی۔ (صحیح البخاری رقم الحدیث : ٣٢٥٦‘ صحیح مسلم رقم الحدیث : ٢٨٣٢۔ ٢٨٣١‘ سنن ابو دائود رقم الحدیث : ٣٩٨٧‘ سنن الترمذی رقم الحدیث : ٣٦٥٨‘ سنن ابن ماجہ رقم الحدیث : ٩٦‘ مسند احمد ج ٣ ص ٧ ٢)

القرآن – سورۃ نمبر 29 العنكبوت آیت نمبر 58