أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

وَيَوۡمَ تَقُوۡمُ السَّاعَةُ يُقۡسِمُ الۡمُجۡرِمُوۡنَ مَا لَبِثُوۡا غَيۡرَ سَاعَةٍ ‌ؕ كَذٰلِكَ كَانُوۡا يُؤۡفَكُوۡنَ ۞

ترجمہ:

اور جس دن قیامت قائم ہوگی مجرم قسم کھاکر کہیں گے ہم صرف ایک ساعت ٹھہرے تھے ‘ وہ اسی طرح بھٹکتے ہوئے رہے

قیامت کے دن کفار کا جھوٹ بولنا 

اس آیت سے یہ بھی معلوم ہوا کہ کفار اور مشرکین قیامت کے دن بھی جھوٹ بولیں گے اور اس آیت میں ان لوگوں کا رد ہے جو کہتے ہیں کہ کفار قیامت کے دن جھوٹ نہیں بولیں گے ‘ اس سلسلہ میں مزید آیات یہ ہیں :

جس دن اللہ تعالیٰ ان سب کو حشر میں جمع کرے گا تو جس طرح یہ تمہارے سامنے قسم کھاتے ہیں اسی طرح اللہ کے سامنے بھی قسم کھائیں گے کہ ان کے پاس کوئی چیز (دلیل) ہے ‘ سنو ! بیشک وہ جھوٹے ہیں۔ (المجادلہ : ١٨)

پھر ان کے شرک کا نتیجہ صرف یہ ہوگا کہ وہ کہیں گے اللہ کی قسم جو ہمارا رب ہے ہم شرک نہیں کرتے تھے ‘ آپ دیکھئے وہ کس طرح اپنی جانوں پر جھوٹ بول رہے ہیں۔ (الانعام : ٢٤۔ ٢٣ )

القرآن – سورۃ نمبر 30 الروم آیت نمبر 55