۱۲۹۔ عن أبی ہریرۃ رضی اللہ تعالیٰ عنہ قال :قال رسول اللہ صلی اللہ تعالی علیہ وسلم : یَکُونُ فِی آخِرِ الزَّمَانِ دَجَّالُونَ کَذّابُونَ یَأتُونَکُمْ مِنَ الْاَحَادِیْثِ بِمَا لَمْ تَسْمَعُوا اَنْتُمْ وَ لَا آبائُ کُمْ ، فَاِیَّاکُمْ وَ اِیَّاہُمْ لاَ یُضِلُّونَکُمْ وَ لاَ یَفْتَنُوْنَکُمْ ۔

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ تعالی علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: آخری زمانہ میں کچھ فریبی جھوٹے پیدا ہونگے جو تمہارے پاس ایسی باتیں لیکر آئیں گے جنکو نہ تم نے سنا ہوگا اورنہ تمہارے آباء و اجدا د نے ۔ لہذا انکو اپنے سے دور رکھنا اور ان سے خود دور رہنا ۔ کہیں وہ تمہیں گمراہ نہ کردیں، یا فتنہ میں نہ ڈال دیں ۔

]۴[ امام احمد رضا محدث بریلوی قدس سرہ فرماتے ہیں

یہ فرقے اور اسی طرح دیوبندی اور نیچری غر ض کہ جو بھی ضروریات دین میں سے کسی شیٔ کا منکر ہو سب مرتد کافر ہیں ۔ان کے ساتھ کھانا پینا ،سلام علیک ، کرنا، انکی موت حیات میں کسی طرح کا کوئی اسلامی برتائو کرنا سب حرام ہے ، نہ انکی نوکری کرنے کی اجازت ، نہ انہیں نوکر رکھنے کی اجازت کہ ان سے دور بھاگنے اور انہیں اپنے سے دور رکھنے کا حکم ہے۔

فتاوی رضویہ ۶/۹۵

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۱۲۹۔ الصحیح لمسلم ، المقدمۃ ، ۱/۰ ۱ ٭ کنز العمال للمتقی، ۲۹۰۲۴، ۱۰/ ۱۹۴

حلیۃ الاولیاء لابی نعیم ، ۴/۹۵ ٭ دلائل النبوۃ للببیہقی، ۶/۵۴۸

تنزیہ الشریعۃ لابن عراق ، ٭ میزان الاعتدال للذہبی ، ۶۲۸۴