حدیث نمبر 583

روایت ہےحضرت نافع سےفرماتے ہیں کہ حضرت عبداﷲ ابن عمر اپنے بیٹے عبیداﷲ کو سفر میں نفل پڑھتے دیکھتے تھے تو ان پر اعتراض نہ کرتے ۱؎(مالک)

شرح

۱؎ کیونکہ سفرمیں نفل پڑھنا سنت رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وسلم ہے،آپ کے صاحبزادے سواری پر ہی نفل پڑھتے تھے یا زمین پر جب پڑھتے جب وقت میں گنجائش ہوتی اس لیئے آپ اعتراض نہ کرتے تھے،جن پر اعتراض کیا ہے وہ وہ حضرات تھے جونفل کی وجہ سے منزل کھوٹی کررہے تھے۔تتمہ:نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے موزوں پر مسح کی مدت مسافر کے لیئے تین دن مقرر فرمائی،نیزعورت پر بغیر محرم تین دن کی مسافت پرجانا حرام کیا۔ان احادیث سےمعلوم ہوتا ہے کہ سفر کی مسافت تین دن کی راہ ہے،یہی احناف کا مذہب ہے۔