۱۴۱۔ عن أبی بکرۃ رضی اللہ تعالیٰ عنہ أن رسول اللہ صلی اللہ تعالی علیہ وسلم قال: ألاَ اُخْبِرُکُمْ بِأکْبَرِ الْکَبَائِرِ ، قالوا : بلیٰ ، یا رسول اللہ ،قال: اَلْاِشْرَاکُ بِاللّٰہِ، وَ عُقُوْقُ الْوَالِدَیْنِ، وَشَھَادَۃُ الزُّوْرِ أوْ قَوْلُ الزُّوْرِ ، قال: فما زال رسول اللہ صلی اللہ تعالی علیہ وسلم یقولہا حتی قلنا:لیتہ سکت ۔

حضرت ابوبکرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا: کیا میں تمہیں کبیرہ گناہوں میں سب سے بڑے گناہ کے بارے میں نہ بتادوں ، صحابۂ کرام نے عرض کیا : یا رسول اللہ ! کیوں نہیں ـ۔ سرکا ر نے ارشاد فرمایا : اللہ کے ساتھ شرک ، والدین کی نافرمانی ،اور جھوٹی گواہی یا جھوٹی بات بڑے بڑے گناہ ہیں ۔ راوی کہتے ہیں :سرکار دو عالم صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم اسی طرح مسلسل فرماتے رہے یہا ںتک کہ ( خوف زدہ ہوکر ) ہم کہنے لگے : کاش سرکار خاموش ہو جاتے ۔ فتاویٰ رضویہ ۵/۱۳۴

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۱۴۱۔الجامع للترمذی ، الشہادات ۲/ ۵۴ ٭ الترغیب والترہیب للمنذری، ۳/ ۱۲۱