بعض منہاجی محبت روافض میں اب بھی اس بات پر بضد ہیں کہ سیدنا فاروق اعظم رضی اللہ عنہ کی شہادت 26ذی الحج کو ہی ہوئی ۔

ایسے ظاہری و باطنی منہاجیوں کیلئے انہی کے گھر سے کچھ حوالہ جات پیش خدمت ہیں آنکھوں سے تعصب و بغض کا سرمہ نکال کر پڑھیں گے تو انشاءالله افاقہ ہوگا ،

👈🏻ماہنامہ منہاج القرآن ستمبر 2018ء میں سیدنا فاروق اعظم رضی الله عنہ پر ایک مضمون شائع کیا گیا جس میں لکھا ہے کہ

“یکم محرم الحرام کو آپ(سیدنا فاروق اعظم رضی الله عنہ) کا یوم شہادت ہے زندہ قومیں اپنے ہیروز کو ہمیشہ یاد رکھتی ہیں “

(ماہنامہ منہاج القرآن ، ص 16 ستمبر 2018 لاہور)

👈🏻اسی طرح مشہور منہاجی اسکالر ڈاکٹر علی اکبر الازھری کا مضمون”حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ پیکرِ عدل و صاحب بصیرت “شائع ہوا جس میں ٹاپ پر ہی لکھا ہے کہ

“یوم شہادت یکم محرم الحرام کی مناسبت سے خصوصی تحریر”

(ماہنامہ منہاج القرآن ، اکتوبر 2015ء لاہور)

👈🏻پھر ایک اور ماہنامہ جو نومبر 2013ء میں شائع ہوا اُس میں بھی آپ کا یوم شہادت یکم محرم الحرام درج ہے ۔

(ماہنامہ منہاج القرآن ، ص20 ، نومبر 2013ء لاہور)

اب یا تو شدت پسند منہاجی اپنے اِن یکم والے بھائیوں کو بھی ناصبی و خارجی جانیں یا پھر تاریخ کے اس اختلاف کو صرف علمی و تحقیقی نظر سے ہی دیکھیں اور خواہ مخواہ اپنی جہالت کا ماتم نہ کریں ۔

✍️ارسلان احمد اصمعی قادری

22/8/2020ء