أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

وَقَالَ الَّذِيۡنَ اسۡتُضۡعِفُوۡا لِلَّذِيۡنَ اسۡتَكۡبَرُوۡا بَلۡ مَكۡرُ الَّيۡلِ وَ النَّهَارِ اِذۡ تَاۡمُرُوۡنَـنَاۤ اَنۡ نَّـكۡفُرَ بِاللّٰهِ وَنَجۡعَلَ لَهٗۤ اَنۡدَادًا ؕ وَاَسَرُّوا النَّدَامَةَ لَمَّا رَاَوُا الۡعَذَابَ ؕ وَجَعَلۡنَا الۡاَغۡلٰلَ فِىۡۤ اَعۡنَاقِ الَّذِيۡنَ كَفَرُوۡا ؕ هَلۡ يُجۡزَوۡنَ اِلَّا مَا كَانُوۡا يَعۡمَلُوۡنَ ۞

ترجمہ:

اور پس ماندہ لوگ متکبرین سے کہیں گے۔ بلکہ یہ تمہاری دن رات کی ساز تھی جب تم ہمیں اللہ کے ساتھ کفر کرنے کا اور اس کے شریک قرار دینے کا حکم دیتے تھے، اور جب وہ عذاب دیکھیں گے تو اپنی ندامت اور پریشانی کا اظہار کریں گے، اور ہم کافروں کی گردنوں میں طوق ڈال دیں گے، اور ان کو صرف ان کاموں کی سزا دی جائے گی جو وہ کرتے تھے

تفسیر:

اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہے : اور پس ماندہ لوگ متکبرین سے کہیں گے بلکہ یہ تمہاری دن رات کی سازش تھی، جب تم ہمیں اللہ کے ساتھ کفر کرنے اور اس کا شریک قرار دینے کا حکم دیتے تھے، اور جب وہ عذاب دیکھیں گے تو اپنیندامت اور پشیمانی کا اظہار کریں گے اور ہم کافروں کی گردنوں میں طوق ڈالیں گے اور ان کو صرف ان کاموں کی سزا دی جائے گی جو وہ کرتے تھے۔ (سبا : ٣٣)

اروا کا معنی 

اس آیت میں اسروا کا لفظ ہے، بعض مترجمین نے اس کا معنی کیا ہے کہ وہ ایک دوسرے سے اپنی ندامت کو چھپاتے تھے یا دل میں اپنی ندامت کو چھپاتے تھے لیکن یہ معنی صحیح نہیں ہے، کیونکہ ان لوگوں نے تو خود امراء سے یہ کہا تھا کہ اگر تم لوگ ہم کو نہ بہکاتے تو ہم ضرور ایمان لے آتے، پھر ان کو اپنی ندامت کو چھپانے کی کیا ضرور تھی، علامہ قرطبی متوفی ٦٦٨ ھ نے کہا ہے کہ اسرار کا لفظ لغت اضداد سے ہے اس کا معنی چھپانا بھی ہے اور ظاہر کرنا بھی ہے۔ (الجامع لاحکام القرآن جز ١٤ ص ٢٧٢) اسی طرح علامہ راغب اصفہانی متوفی ٥٠٢ ھ نے بھی لکھا ہے کہ اسرار کا معنی ظاہر کرنا بھی ہے۔ (المفردات ج ١ ص ٣٠٢)

علامہ آلوسی نے اس پر یہ اعتراض کیا ہے کہ علامہ ابن عطیہ اندلسی نے یہ کہا ہے کہ یہ بال کہ ثابت نہیں ہے کہ اسرار لغت اضداد سے ہے، بلکہ اسرار باب افعال ہے اور اس کا خاصہ ہے سلب ماخذ اشکیتہ کا معنی ہے میں نے اس کی شکایت زائل کی اس طرح اسروا الندامۃ کا معنی ہے انہوں نے اپنی ندامت کا اظہار کیا اور اس کا اخفا نہیں کیا۔ (روح المعانی جز ٢٢ ص ٢١٤)

تبیان القرآن – سورۃ نمبر 34 سبا آیت نمبر 33