علامہ رضوی کے امتیازات

دنیا بھر میں لبیک یا رسول کے نعرے کی گونج

ناموس رسالت پر جان تک قربان کر دینے والی عظیم فورس کی تیاری

عالمی گستاخان رسول کے ایوانوں میں کھلبلی

عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ کا زبردست شعور

افکار و کلام اعلی حضرت کا فروغ

فکر و کلام اقبال کی تجدید

اسلامی انقلابی نظام سیاست کا شعور

یزیدان عصر کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرنے کی جرات

عشق رسول میں فنائیت کا لا زوال و بے مثال اظہار

جہاد اسلامی کے جذبے کی از سر نو بیداری

کشمیر و اہل کشمیر کے حقوق کے لیے توانا آواز

بھارتی حکمرانوں کے لیے شمشیر بے نیام

تحفظ ناموس صحابہ و اہل بیت کی علم برداری

لاکھوں افراد کے دلوں میں شریعت مطہرہ پہ عمل کی تڑپ

فرنگی تعلیم کی بجائے دینی تعلیم کی عظمت کا جذبہ

دین کی سربلندی کے لیے بے خوف ہو کر ہر طرح کی قربانی دینے کا ذہن

مذہبی قائدین کے لیے عظیم ترین جنازے کی صورت میں پیغام ھدایت

حکمرانوں کی آنکھیں کھول دینے والی شان دار فکر

آئندہ طویل ترین عرصے تک دین و مسلک کی بقاء و استحکام کا انتظام

جملہ مذاہب، مسالک، مکاتب و شعبہ ہائے زندگی کی طرف سے زبردست پذیرائی کا حصول

امام احمد بن حنبل کی طرح جسم و جان پر طرح طرح کے مظالم کی برداشت

اتنا عظیم ترین کام معذوری کی حالت میں اور صرف دس سال کے قلیل ترین عرصے میں

(از : عون محمد سعیدی مصطفوی بہاولپور)