{گہن کی نماز}

سورج گہن}

سورج گہن کی نماز سنتِ موکدہ ہے اورچاند گرہن کی نماز مستحب ہے سورج گہن کی نماز جماعت سے پڑھنی مستحب ہے تنہا بھی پڑھ سکتے ہیں۔(درمختار وردمختار)

مسئلہ : گہن کی نماز اس وقت پڑھیں جب سورج میں گہن لگا ہو گہن چھوٹنے کے بعد نہیں اگر گہن چھوٹنا شروع ہوگیا مگر ابھی باقی ہے تواب بھی نماز پڑھ سکتے ہیں اورگہن کی حالت میں اگر اس پر اَبر(بادل) جائے جب بھی نماز پڑھیں۔(جوہرہ نیرہ)

مسئلہ : ایسے وقت میں گہن لگا کہ اس وقت نماز پڑھنا ممنوع ہے تونماز نہ پڑھیں بلکہ دُعا میںمشغول رہیں اوراِسی حالت میں سورج ڈوب جائے تو دُعا ختم کردیں اورمغرب کی نماز پڑھیں۔(ردالمختار)

مسئلہ : گہن کی دورکعتیں ہیں گہن کی نماز میںنہ اذان ہے نہ اقامت ہے نہ بلند آواز سے قرأت اورنماز کے بعد دُعا کریں دو رکعت سے زیادہ بھی پڑھ سکتے ہیں ۔ (ردمختار ودرمختار)