{رَمْی کے متعلق سُوال وجواب }

سُوال }… کیا عورت کو بھی رَمْی کرنا ضروری ہے ؟

جواب}…جی ہاں اگر نہیں کرے گی تو دَم واجب ہوگا۔

سُوال }… اگر عورت کسی کو وکیل کردے توکوئی حرج ہے یا نہیں ؟

جواب }… عورت ہویا مرد ، اُس وقت تک کسی کو وکیل نہیں کرسکتے ، جب تک اس قدر مریض نہ ہو جائیں کہ سَواری پر بھی جَمرہ تک نہ پہنچ سکیں اگر اس قَدر بیمار نہیں ہیں پھر بھی کسی عورت یا مرد نے دوسرے کو وکیل کردیا اور خود رَمْی نہیں کی تو دَم واجب ہوجائے گا۔

سُوال }…اگر کسی دن کی رَمْی رہ گئی تو کیا کفارہ ہے ؟

جواب }…دَم واجب ہوگیا۔

سُوال }… اگر بالکل رَمْی نہیں کی ، توکتنے دَم واجب ہوں گے ؟

جواب }…خواہ ایک دن کی رہ گئی یا سب دنوں کی صرف ایک ہی دم واجب ہوگا۔

سُوال }… اگر رَمْی خِلافِ ترتیب ہوگئی ، توکیا کرے؟

جواب }… خِلافِ ترتیب رَمْی کرنا مکروہ ہے کوئی کفارہ نہیں ۔ بہتر یہ ہے کراعادہ کرلے ۔

سُوال }… اگر کسی دن کی اکثر رَمْی ترک کردی ۔مثلاً دسویں کو صرف تین کنکریاں ماریں تو کیا سزا ہے ؟

جواب }… دَم واجب ہوگیا۔

سُوال }… اگر کسی دن آدھی سے زیادہ ماریں مثلاً گیارہویں کو تین شیطانوں کو اکیس کنکریاںمارنی تھیں ۔مگر گیارہ ماریں تو کیا سزا ہے ؟

جواب }… فی کنکری ایک ایک صدقہ دینا ہوگا۔