{پانی پینے کا طریقہ ومسائل}

مسئلہ : پانی بسم اللہ شریف پڑھ کر سیدھے ہاتھ سے پئے اور تین سانس میں پئے ہر مرتبہ برتن کو منہ سے ہٹا کر سانس لے پہلی اوردوسری مرتبہ ایک ایک گھونٹ پئے اورتیسری سانس میںجتنا چاہے پی لے اس طرح پینے سے پیاس بُجھ جائے گی، دیکھ کر اُجالے میں پیئے، پانی چوس کر پیئے ، غٹ غٹ بڑے بڑے گھونٹ نہ پیئے جب پی چکے تو الحمد للہ کہے۔

مسئلہ : مَشک کے دہانے میںمنہ لگا کر پانی پینا مکروہ ہے کیا معلوم کوئی مُضر چیز اس کے حلق میں چلی جائے۔ (عالمگیری)

مسئلہ: مومن کاجھوٹا پانی نہ پھینکا جائے کیونکہ مومن کے جھوٹے پانی میںشفا ہے ۔

مسئلہ: سبیل کا پانی مالدار شخص بھی پی سکتاہے مگر وہاں سے پانی کوئی شخص گھر نہیں لے جاسکتا کیونکہ سبیل پینے کے لئے لگائی گئی ہے نہ کہ گھر پانی لے جانے کے لئے ہاں اگر سبیل کامالک اجاز ت دے تو گھر لے جاسکتے ہیں۔(عالمگیری)

مسئلہ : وضو کا بچا ہوا پانی پھینکنا اسراف ہے اس پانی کواور آبِ زم زم کے پانی کو کھڑے کھڑے پینا چاہیے ۔

مسئلہ : کوئی اگر پانی ، نمک اورآگ مانگے تواس کو منع نہیںکرنا چاہیے ۔