حکومت مذاکرات کے ذریعے معاملات حل کرے،
نہتے لوگوں پر گولیاں برسا کر لاشیں گرانا غلط ہے،گرفتار کارکنوں کو فوری رہا کیا جائے،
موجودہ حالات کے پیش نظر مذہبی جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس بلا رہے ہیں۔علامہ مظہر سعید کاظمی،سید حامد سعید کاظمی

ملتان (سوسائٹی نیوز)
جماعت اہلسنت پاکستان کے مرکزی امیر علامہ مظہر سعید کاظمی ،سابق وفاقی وزیر مذہبی امور سید حامد سعید کاظمی نے موجودہ حالات کے پیش نظر مذہبی جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرس بلوانے کا اعلان کر دیا – انہوں نے کہا حکومت فوری طور پر مذاکرات کا راستہ اختیار کرے اور گرفتار کارکنان کو فوری طور پر رہا کیا جائے گرفتار کارکنان کو اگر رہا نہ کیا گیا تو آئندہ کا لائحہ عمل آل پارٹی کانفرنس میں کیا جائے گا ۔

انہوں نے کہا ملتان سمیت ملک بھر میں پولیس نے علماء کے خلاف جو مقدمات درج کیے ھیں ان میں دنیا جہان کی دفعات شامل کی گئی ھیں جو انتہائی افسوناک اور قابل مذمت اقدام ھے جس سے مزید اشتعال پیدا ھوا ھے۔ انہوں نے کہا ہے کہ انڈیا سے مذاکرات ہوسکتے ہیں تو اپنے لوگوں سے کیوں نہیں ہوسکتے ۔

انہوں نے کہا کہ یہ مسئلہ آسانی سے حل ہوسکتا ہے اگر پاکستان سمیت تمام اسلامی ممالک یہ قرارداد دیتے کہ اگر کسی ملک نے شان رسول میں گستاخی کی تو اس سے سفارتی تعلقات ختم کردئیے جائیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملتان پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ہوئے کیا۔

حامد سعید کاظمی نے کہا کہ لوگ کالز کر رہے ہیں کہ وہ جانیں دینے کو تیار ہیں۔ ہم نے لوگوں کو روکا ہوا ہے حکومت مذاکرات سے مسئلے کو حل کرے، نہتے لوگوں پر گولیاں برسا کر لاشیں گرانا غلط ہے۔ یہ کراس فائرنگ نہیں ہے ،ملکی اداروں کے خلاف سازش نظر آرہی ہے ، پاکستان کو بند گلی میں دھکیل کر انٹرنیشنل لابی کو موقع دیا جارہا ہے۔

پاکستان واحد ایٹمی ملک ہے جہاں پولیس اپنی ہی عوام کو مار رہی ہے ،ہمسایہ ملک میں مذاق اڑایا جارہا ہے۔ یہ ایک تحریک کا معاملہ نہیں ہے ، بلکہ امت مسلمہ کا معاملہ ہے ، ایک دو دن میں سربراہی اجلاس بلا کر مسئلے کا لائحہ عمل بنائیں گے۔حکومت کو کون یہ راستہ دکھا رہا ؟ انڈیا کے ساتھ مذاکرات ہوسکتے ہیں مگر اپنی عوام سے مذاکرات نہیں ہوسکتے ۔

یہ جو گرفتاریاں ہورہی ہیں اور اہل سنت جماعت کے لوگ بھی لاپتہ ہورہے ہیں جو آج تک نہیں ہوا ، ہم گلوبل ویلج میں رہ رہے ہیں پوری دنیا تشدد دکھا رہی ہے لیکن ہم اپنے میڈیا پر نہیں دکھا رہے۔

اس موقع پر جماعت اہل سنت پاکستان کے سربراہ سید مظہر سعید کاظمی نے کہا کہ حکومت نے دانشمندی سے کام نہیں لیا،گھٹیا طریقے سے کام لیا ، کسی بھی سیاسی جماعت کو دہشتگرد قرار دینا غلط ہے حکومت نے غیر قانونی کام کیا ہے ، حکومت کسی سیاسی جماعت کو کالعدم قرار نہیں دے سکتی۔

مدینہ کی ریاست میں انصاف اور قانون نہیں ہے۔ نہتے لوگوں پر گولیاں برسائیں گئیں۔ آج لاہور کا نقشہ سری نگر کا لگ رہا ہے ، جلد تمام مذہبی جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرس بلائیں گے۔ پریس کانفرنس میں علامہ رمضان شاہ فیضی،مولانا خادم رضوی،مولانا مطیع الرسول سعیدی بھی موجود تھے۔