أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

وَوُفِّيَتۡ كُلُّ نَفۡسٍ مَّا عَمِلَتۡ وَهُوَ اَعۡلَمُ بِمَا يَفۡعَلُوۡنَ۞

ترجمہ:

اور ہر نفس کو اس کے اعمال کا پورا پورا بدلہ دیا جائے گا اور اللہ ان کے سب کاموں کو خوب جاننے والا ہے ؏

تفسیر:

الزمر : ٧٠ میں فرمایا : ” اور ہر نفس کو اس کے اعمال کا پورا پورا بدلہ دیا جائے گا اور اللہ ان کے کاموں کو خوب جاننے والا ہے “

اس کا یہ معنی نہیں ہے کہ ہر نفس کو اس کے برے اعمال کی ضرور سزادی جائے گی، کیونکہ اس آیت سے وہ گنہگار مسلمان مستثنیٰ ہیں جن کو اللہ تعالیٰ اپنے فضل و کرم سے معاف فرمادے اور اللہ تعالیٰ کے معاف فرمانے والی آیات اس عموم کی مخصص ہیں، اللہ تعالیٰ بندوں کے اعمال اور ان کی کیفیات کو خوب جاننے والا ہے، وہ ہر مومن کو اس کے نیک اعمال کی اچھی جزاء دے گا اور اس کے برے اعمال کو وہ چاہے گا تو معاف فرمادے گا اور چاہے تو ان پر مواخذہ فرمائے گا، ہم اس کے مواخذہ سے اسی کی پناہ میں آتے ہیں اور کفار اور مشرکین کو پکڑے گا اور ان کو دوزخ میں دائمی عذاب دے گا، بیشک وہ ہر چیز پر قادر ہے۔

تبیان القرآن – سورۃ نمبر 39 الزمر آیت نمبر 70