درس_حدیث*

علم کا اٹھ جانا اور جہل کا غالب ہونا

عن أنس ، قال : قال رسول الله صلى الله عليه وسلم : إن من أشراط الساعة أن يرفع العلم ، ويثبت الجهل ، ويشرب الخمر ، و يظهر الزنا۔

(صحيح البخاري رقم الحديث ٨٠)

مفھوم: حضرت انس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: بے شک قیامت کی علامتوں میں سے یہ ہے کہ علم اٹھا لیا جائے گا اور جہل ثابت ہوگا اور شراب پی جائے گی اور زنا بکثرت ہوگا۔

مختصر وضاحت:: علم اٹھ جانے سے مراد یہ ہے کہ علماء اٹھ جائیں گے یعنی جب علماء فوت ہوجائیں گے تو لوگ جاہلوں کو پیشوا بنالیں گے۔

علامہ عینی علیہ الرحمہ فرماتے ہیں: قال القاضي عياض (ت 544 ھ) : وقد وجد ذلك في زماننا كما أخبر به عليه الصلاة والسلام

قال الشيخ قطب الدين (ت 735 ھ) : قلت هذا قوله مع توفر العلماء في زمانه فكيف بزماننا

قال العبد الضعيف ( اي بدر الدين العيني ت 855 ھ) :

هذا قوله مع كثرة الفقهاء والعلماء من المذاهب الأربعة والمحدثين الكبار في زمانه فكيف بزماننا الذي خلت البلاد عنهم وتصدرت الجهال بالإفتاء والتعين في المجالس والتدريس في المدارس ، فنسأل السلامة والعافية.

(عمدة القاري جلد ١ صفحة ١٢٥)

مفھوم: قاضی عیاض علیہ الرحمہ فرماتے ہیں: حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے جیسا فرمایا تھا ویسا ہمارے زمانے میں موجود ہے۔

شیخ قطب الدین علیہ الرحمہ فرماتے ہیں: میں کہتا ہے ان کا یہ فرمان (دیکھیں) حالانکہ ان کے زمانے میں علماء کثیر تھے تو ہمارے زمانے کی کیا حالت ہوگی؟؟؟

عبد ضعیف علامہ عینی علیہ الرحمہ فرماتے ہیں: ان کا یہ فرمان حالانکہ ان کے زمانے میں کثیر فقہاء، مذاہب اربعہ کے بڑے علماء اور محدثین موجود تھے تو ہمارے زمانے کی کیا حالت ہوگی کہ ان سے شہر خالی ہوگئے، اور جاہل افتاء، مجالس میں اور مدارس میں تدریس کے لئے آگے بڑھ گئے۔ ہم سلامتی اور عافیت کا سوال کرتے ہیں۔۔۔

علامہ سعیدی علیہ الرحمہ فرماتے ہیں: علماء فوت ہوجائیں گے اور لوگ جاہلوں کو اپنا پیشوا بنالیں گے اور وہ اپنی رائے سے دین میں احکام جاری کریں گے اور اپنی جہالت کے با وجود فتوے جاری کریں گے، احادیث کے غلط ترجمے کریں گے، اردو کی کتابیں پڑھ اور ان میں اپنی طرف سے رنگ آمیزی کرکے وعظ کریں گے، خود بھی گمراہ ہوں گے اور دوسروں کو بھی گمراہ کریں گے، ہمارے زمانہ میں اس کی بہت نظائر ہیں ہم ان جاہلوں کے غلبہ سے اللہ کی پناہ طلب کرتے ہیں۔

یہ سب اکابرین اگر آج کل کی حالت دیکھتے تو کیا ارشاد فرماتے؟؟؟؟

ابو الحسن محمد شعیب خان

16 جون 2020