{ماہِ صفر کیا منحوس ہے ؟}

مسئلہ : ماہِ صفر کو لوگ منحوس کہتے ہیں اس میں خوشی وغیرہ کی رسومات نہیںکرتے ہیں اس کی ابتدائی تیرہ تاریخیں نہایت ہی منحوس اورتیرہ تیجی کے نام سے منسوب کی جاتی ہیں یہ سب جہالت کی باتیں ہیں۔

حدیث شریف: میںفرمایا کہ صفر کوئی چیز نہیں یعنی لوگوں کا اُسے منحوس سمجھنا غلط ہے۔

{آخری بدھ کو مٹھائی تقسیم کرنا}

مسئلہ : ماہِ صفر کی آخری بدھ کو منایاجاتاہے مٹھائیاں بانٹی جاتی ہیں لوگ سیر وتفریح کے لئے باغات میںگھومتے ہیں اورکہتے ہیں کہ اس دن سرکارِ اعظم ﷺنے غسلِ صحت فرمایا تھا یہ سب باتیں بے اصل ہیں بلکہ ان دنوں میں سرکارِ اعظم ﷺکامرض شدّت اختیار کرچکا تھا لہٰذا مٹھائیاں بانٹنا، باغات میں جانا ، خوشیاں منانا، اوریہ کہنا کہ صفر میں بَلائیں نازل ہوتی ہیں یہ سب باتیں غلط ہیں اس کی کوئی حقیقت نہیں ۔