(۰ ۱) زیادہ قیل وقال سے بچو

۲۵۹ ۔عن المغیرۃ بن شعبۃ رضی اللہ تعالیٰ عنہ قال : قال صلی اللہ تعالی علیہ وسلم : اِنَّ اللّٰہَ کَرِہَ لَکُمْ قِیْلَ وَقَالَ،وَکَثُرَۃُ السُّؤَالِ وَاِضَاعَۃُ الْمَالِ ۔

حضرت مغیرہ ابن شعبہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسو ل اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلّم نے ارشاد فرمایا :بیشک اللہ تعالیٰ بلا وجہ قیل وقال،کثرت سوال،اور مال برباد کر نے کو نا پسند فرما تا ہے ۔ فتاوی رضویہ ۶/۴۲۲

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۵۹۔ الجامع الصحیح للبخاری ، الا ستقراض ، ۱/ ۳۲۴ ٭ المسند لاحمد بن حنبل، ۴/ ۲۴۹

کنز العمال للمتقی ، ۴۴۰۲۸، ۱۶ / ۸۶ ٭ جمع الجوامع للسیوطی ، ۴۹۴۳