حدیث نمبر 758

روایت ہے حضرت عثمان ابن ابی العاص سے کہ انہوں نے رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وسلم کی خدمت میں درد کی شکایت کی جو ان کےجسم میں تھا ۱؎ تو ان سے رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایاکہ اپنےجسم کے بیمارحصہ پر اپنا ہاتھ رکھو،تین بار بسم اﷲ اور سات بار یہ دعا پڑھو،میں اﷲ کی عزت اور اﷲ کی قدرت کی پناہ لیتا ہوں اس کے شر سے جو اب میں پاتا ہوں اور جس سے آئندہ خوف کرتا ہوں میں نے یہ عمل کیا تو اﷲنے میری بیماری دورکردی ۲؎(مسلم)

شرح

۱؎ اس سے معلوم ہوا کہ بیماری،ناداری اورتمام مصائب کی شکایت حضورصلی اللہ علیہ وسلم سے کرسکتے ہیں۔ہم گنہگاروں کا حضور صلی اللہ علیہ وسلم سے فریادکرنا اسی حدیث سے ماخوذ ہے،اس میں رب سے ناراضی نہیں بلکہ اپنے شہنشاہ سے فریاد ہے اور دفعیہ کے لیے عرض معروض ہے جیسے مظلوم حاکم سے اور بیمارحکیم سے اپنی شکایات پیش کرتے ہیں۔

۲؎ خیال رہے کہ ان صحابی نے خود ہی دعا نہ مانگی بلکہ حضورصلی اللہ علیہ وسلم سے اجازت لےکر دعا کی۔مشائخ کرام سے جو وظیفوں اور دعاؤں کی اجازت لی جاتی ہے اس کی اصل یہ حدیث ہے،اجازت سے عمل کی تاثیر بڑھ جاتی ہے،دعائیں کارتوس ہیں اور بزرگوں کی زبان اور اجازت رائفل،بغیر رائفل شیر مارنے والا کارتوس مرغی کو نہیں مارسکتا۔