أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

اِصۡلَوۡهَا فَاصۡبِرُوۡۤا اَوۡ لَا تَصۡبِرُوۡا‌ۚ سَوَآءٌ عَلَيۡكُمۡ‌ؕ اِنَّمَا تُجۡزَوۡنَ مَا كُنۡتُمۡ تَعۡمَلُوۡنَ ۞

ترجمہ:

اس دوزخ میں داخل ہو جائو پھر خواہ تم صبر کرو یا نہ کرو ‘ یہ تمہارے لیے برابر ہے ‘ تم کو ان ہی کاموں کی سزا دی جارہی ہے جو تم کرتے تھے

الطور : ١٦ میں فرمایا : اس دوزخ میں داخل ہو جائو ‘ پھر خواہ تم صبر کرو یا نہ کرو ‘ یہ تمہارے لیے برابر ہے ‘ تم کو ان ہی کاموں کی سزا دی جا رہی ہے جو تم کرتے تھے۔

دوزخ کے مخافظین ان سے یہ بات کہیں گے کہ اب تم دوزخ میں داخل ہو کر اس کی گرمی کو چکھو ‘ خواہ تم اس عذاب کو برداشت کرسکو یا نہ کرسکو ‘ خواہ تم اس عذاب پر آہ وفغاں کا اظہار کرو اور بےچینی اور بےقراری کا اظہار کرو یا صبر و سکون کے ساتھ اس عذاب کو برداشت کرو تمہیں کوئی چیز نفع نہیں دے گی اور تم کو تمہاری بداعمالیوں کی سزا مل کر رہے گی۔

القرآن – سورۃ نمبر 52 الطور آیت نمبر 16