افضل الخلق بعد الرسل کا امتیازی مقام

 

رب تعالٰی نے قرآن مقدس میں اپنے حبیب پاک ﷺ کے جانثار، بہادر، وفادار اور بے لوث صحابہ کرام علیہم الرضوان کی عظمت و فضائل اور ان کے مقام و مرتبے کے اظہار و تائید اور تصدیق و تسلیم کے لیے متعدد آیات نازل فرمائیں۔ ان آیات میں أصحاب رسول رضوان اللہ علیہم اجمعین کو حزب اللہ، مفلحون،فائزون،صادقون،راشدون،عادلون، متقون، مومنون حقًا قرار دیا ہے۔ بلا شک و شبہ سیدنا أبو بکر صدیق رضی اللہ عنہ ان تمام القابات اور اوصاف کے سب سے اعلٰی درجے پر فائز ہیں اور کسی بھی دوسرے صحابی میں موجود اوصاف اور خوبیوں کے جامع آپ ہی ہیں۔

 

رسول کریم ﷺ کے خلیفہ بلافصل، افضل البشر بعد الانبیاء بالتحقیق، اصدق الصادقین یعنی سیدنا و مولانا ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ کے گھرانے کو ایک ایسا منفرد شرف حاصل ہے جو ان علاوہ کسی دوسرے مسلمان گھرانے کو حاصل نہیں ۔ حضرت ابو بکر صدیق رضی اللہ عنہ خود صحابی، ان کے والد حضرت ابو قحافہ رضی اللہ عنہ بھی صحابی، آپ کے تینوں بیٹے (حضرت عبداللہ رضی اللہ عنہ، حضرت عبدالرحمن رضی اللہ عنہ اور حضرت محمد بن ابی بکر رضی اللہ عنہ) بھی صحابی، آپ رضی اللہ عنہ کے پوتے بھی صحابی، آپکی بیٹیاں (حضرت سیدہ عائشہ رضی اللہ عنہ، حضرت سیدہ اسماء رضی اللہ عنہ اور حضرت سیدہ ام کلثوم رضی اللہ عنہ بنت ابی بکر) بھی صحابیات اور یہاں تک کے آپ کے نواسے بھی صحابی ہوئے۔

 

اصدق الصادقین سید المتقین

چشم و گوشِ وزارت پہ لاکھوں سلام

یعنی اس افضل الخلق بعد الرسل

ثانی اثنین ہجرت پہ لاکھوں سلام

کتبہ: افتخار الحسن رضوی

۲۳ جمادی الآخر ۱۴۴۳ بمطابق ۲۶ جنوری ۲۰۲۲

اللہم صل وسلم و بارک علٰی سیدنا و حبینا و طبیب قلوبنا محمد وعلٰی الہ واصحابہ و بارک وسلم