لتا مر گئیں، افسوس ہمیں بھی ہوا لیکن۔۔۔۔

 

معروف گائیکہ لتا منگیشکر کل 92 سال کی عمر میں اپنے ہزاروں مداحوں کو چھوڑ کر موت کی آغوش میں چلی گئیں۔

موصوفہ نے ایک طویل عرصہ تک موسیقی کی دنیا میں اپنا مقام بنائے رکھا۔ ان کی موت پہ ہمیں دو حوالوں سے افسوس ہوا۔

الف۔ ایک لیجنڈ ااتنی طویل زندگی جینے کے باوجود اپنے خالق ومالک کو کما حقہ پہچان پائیں نہ اس پہ ایمان لا سکیں۔

کاش وہ ایسا کر ہاتیں تو آج ہم ان کے لیے خلوص دل سے مغفرت کی دعائیں کر رہے ہوتے۔

ب. لتا کی جسمانی موت کے ساتھ ساتھ کلمہ گو مسلم بھائیوں کی روحانی موت اور اسلام کے بنیادی عقائد سے غفلت پہ افسوس ہو رہا ہے جو RIP کے اسٹیٹس لگا رہے ہیں۔

اللہ عزوجل نے اسلام کے علاوہ کسی بھی دوسرے دین پہ مرنے والوں کی مغفرت کی دعا کی اجازت نہیں دی۔

 

ہاں ان کی زندگی میں ان کی ہدایت کی دعا کیجیے۔

ایسے لوگوں کے مرنے کے بعد بلا ضرورت کچھ کہنے کے بجائے کف اللسان کا رویہ بہتر ہے۔

ہاں جہاں کوئی لبرل حقائق کو مسخ کرے تو وہاں قرآن کریم کا حکم سنا دیجیے: 1۔ انَّ ٱللَّهَ لَا یَغۡفِرُ أَن یُشۡرَكَ بِهِۦ وَیَغۡفِرُ مَا دُونَ ذَ ٰ⁠لِكَ لِمَن یَشَاۤءُۚ وَمَن یُشۡرِكۡ بِٱللَّهِ فَقَدِ ٱفۡتَرَىٰۤ إِثۡمًا عَظِیمًا0

[سُورَةُ النِّسَاءِ: ٤٨]

 

2۔ مَا كَانَ لِلنَّبِیِّ وَٱلَّذِینَ ءَامَنُوۤا۟ أَن یَسۡتَغۡفِرُوا۟ لِلۡمُشۡرِكِینَ وَلَوۡ كَانُوۤا۟ أُو۟لِی قُرۡبَىٰ مِنۢ بَعۡدِ مَا تَبَیَّنَ لَهُمۡ أَنَّهُمۡ أَصۡحَـٰبُ ٱلۡجَحِیمِ0

[سُورَةُ التَّوۡبَةِ: ١١٣ 9867839862