أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

فَفَتَحۡنَاۤ اَبۡوَابَ السَّمَآءِ بِمَآءٍ مُّنۡهَمِرٍ ۞

ترجمہ:

سو ہم نے موسلادھار بارش سے آسمانوں کے دروازے کھول دیئے

القمر :11 میں فرمایا : سو ہم نے موسلادھار بارش سے آسمانوں کے دروازے کھول دیئے۔

ایک بحث یہ ہے کہ اس آیت میں آسمان کے دروازوں سے مراد حقیقہ آسمان کے دروازے ہیں یا یہ اطلاق مجازی ہے، سو اگر یہ مراد لیا جائے کہ حقیقہ آسمان کے دروازے مراد ہیں تو اس میں بھی کوئی استبعاد اور اشکال نہیں ہے، کیونکہ آسمانوں کے دروازے ہیں اور اگر اس سے مجاز مراد بادل لئے جائیں تب بھی درست ہے، جیسا کہ جب شدید بارش ہو تو کہا جاتا ہے کہ آسمان کے پرنالے بہہ رہے ہیں، نیز اس آیت میں ” ماء منھمر “ کے الفاظ ہیں ” انھمار “ کا معنی ہے : زور سے پانی کا گرنا، یعنی بادلوں سے بہت زور اور شدت سے پانی برس رہا تھا۔

القرآن – سورۃ نمبر 54 القمر آیت نمبر 11