أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

فِيۡهِمَا عَيۡنٰنِ تَجۡرِيٰنِ‌ۚ۞

ترجمہ:

ان جنتوں میں دو چشمے بہہ رہے ہیں

جنت کے چشموں کی کیفیت

الرحمن :50-51 میں فرمایا : ان جنتوں میں دو چشمے بہہ رہے ہیں۔۔ سو تم دونوں اپنے رب کی کون کون سی نعمتوں کو جھٹلائو گے۔

حضرت ابن عباس (رض) نے فرمایا : ان دونوں جنتوں میں سے ہر ایک میں چشمے بہہ رہے ہیں۔ نیز حضرت ابن عباس نے فرمایا : ان میں صاف شفاف پانی بہہ رہا ہے، ان میں ایک چشمہ تسنیم ہے اور دوسرا چشمہ سلسبیل ہے، اور حضرت ابن عباس نے فرمایا : یہ چشمے دنیا کے چشمے سے دوگنے چوگنے بڑے ہیں، اس کی کنکریاں سرخ یاقوت اور سبز زمرد ہیں، اس کی مٹی کافور ہے، اس کی کیچڑ مشک ہے اور اس کے دو کنارے زعفران ہیں۔ عطیہ نے کہا : ان میں سے ایک پانی کا چشمہ ہے اور دوسرا شراب طہور کا ہے، وہ پینے والوں کی لذت کے لئے ہے۔ ابوبکر ورّاق نے کہا : جنت کے یہ دو چشمے ان لوگوں کے لئے بہہ رہے ہیں جن کی آنکھوں سے دنیا میں خوف خدا سے آنسو بہتے رہتے تھے، (الکشف و البیان ج 9 ص 190 الجامع الاحکام القرآن جز 27 ص 162)

القرآن – سورۃ نمبر 55 الرحمن آیت نمبر 50