أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

لَيۡسَ لِـوَقۡعَتِهَا كَاذِبَةٌ‌ ۞

ترجمہ:

(تو) اس کے وقوع کے متعلق کوئی جھوٹ بولنے والا نہیں ہوگا

الواقعہ :2 میں فرمایا ہے : اس کے متعدد محمل ہیں

1 ” کاذبۃ “ ” عاقبۃ “ کی طرح مصدر ہے اور کاذبۃ “ کا معنی کذب ہے یعنی اس کے وقوع کے متعلق کوئی جھوٹ بولنے والا نہیں ہوگا۔

2 قیامت کی ہیبت کی وجہ سے اس دن قیامت کے متعلق کوئی جھوٹ بولنے والا نہیں ہوگا۔

3 اگر کوئی شخص قیامت کے متعلق جھوٹ بولتا اور اس دن یہ کہتا کہ کوئی قیامت نہیں اور کوئی واقعہ نہیں ہوا تو وہ بہت بڑا جھوٹا ہوتا اور اس عظیم واقعہ کو دیکھ کر کوئی جھوٹ بولنے والا نہیں ہوگا۔

4 زجاج، حسن اور قتادہ نے کہا : اس دن قیامت کو کوئی رد نہیں کرسکے گا۔

5 الثوری اور الکسائی نے کہا : اس دن قیامت کے وقوع کو دیکھ کر کوئی شخص قیامت کی تکذیب نہیں کرسکے گا اور کوئی شخص قیامت کو جھٹلا نہیں سکے گا اور ہر شخص قیامت کی تصدیق کرے گا۔

ایک قول یہ ہے کہ قیامت کا وقوع ایک حتمی اور شدنی ہے اور اس میں کوئی مذاق نہیں ہے۔

القرآن – سورۃ نمبر 56 الواقعة آیت نمبر 2

سورة  الواقعة الآية رقم 2