ٹرانس جیندڑ ایکٹ 2018 سے نافذ العمل ہے۔اورنہ جانے ایسے ہی کتنے غیراسلامی قوانین بڑی خاموشی سے بنائے جا چکے ہوں گے۔اس قانون کا بھی عوام کو تب پتا چلا جب ایک “مذہبی سیاسی جماعت” کے ایک مشہور “مولوی” نے اس کے خلاف آواز اٹھائی۔ اور اب بھی اس ایکٹ کے خلاف سب سے زیادہ […]

مکمل تحریر پڑھیے »