کوئی نماز نہیں
sulemansubhani نے Sunday، 17 May 2020 کو شائع کیا.

حدیث نمبر 265 روایت ہے حضرت ابو سعید خدری سے فرماتے ہیں فرمایا رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وسلم نے کہ فجر کے بعد سورج بلند ہونے تک کوئی نماز نہیں اور نہ عصر کے بعد سورج ڈوبنے تک ۱؎(مسلم،بخاری) شرح ۱؎ یعنی نماز فجر اور نماز عصر پڑھ لینے کے بعد نوافل ممنوع ہیں […]

مکمل تحریر پڑھیے »


حدیث نمبر 264 روایت ہے حضرت عقبہ ابن عامر سے کہ ہم کو نبی صلی اللہ علیہ وسلم تین وقتوں میں نماز پڑھنے اور مردے دفن کرنے سے منع فرماتے تھے ۱؎ جب سورج ظاہر ظہور طلوع ہورہا ہو حتی کہ بلند ہوجائے اور جب ٹھیک دوپہری قائم ہو یہاں تک کہ سورج ڈھل جائے […]

مکمل تحریر پڑھیے »


باب اوقات النھی ممانعت کے وقتوں کا باب ۱؎ الفصل الاول پہلی فصل ۱؎ یعنی جن وقتوں میں نماز منع ہے۔خیال رہے کہ تین وقت وہ ہیں جن میں فرض نفل ہر نماز منع ہے:طلوع آفتاب،غروب اور نصف النہار(بیچ دوپہری)پانچ وقت وہ ہیں جن میں فرض جائز،نفل منع:صبح صادق سے سورج نکلنے تک،نماز عصر کے […]

مکمل تحریر پڑھیے »


وہ شخص آگ میں ہرگز داخل نہ ہوگا
sulemansubhani نے Wednesday، 2 October 2019 کو شائع کیا.

باب فضائل الصّلوۃ نمازکے فضائل کاباب ۱؎ الفصل الاول پہلی فصل ۱؎ اگرچہ شروع کتاب الصلوۃ میں نمازکے فضائل آچکے ہیں،لیکن وہاں نماز کے فضائل تھے یہاں نماز کے اوقات کے،اسی لئے اس کا الگ باب باندھا اور یہ باب”باب الاوقات”کے بعد رکھا۔ حدیث نمبر :586 روایت ہے حضرت عمارہ ابن روبیہ سے فرماتے ہیں […]

مکمل تحریر پڑھیے »


یہ نمازاداہوگی نہ کہ قضاء
sulemansubhani نے Thursday، 26 September 2019 کو شائع کیا.

حدیث نمبر :565 روایت ہے انہی سے فرماتے ہیں فرمایا رسول اﷲ صلی اللہ علیہ وسلم نے جب تم میں سے کوئی سورج ڈوبنے سے پہلے عصرکی ایک رکعت پالے وہ اپنی نماز پوری کرلے اورجب سورج چمکنے سے پہلے فجرکی ایک رکعت پالے تو اپنی نماز پوری کررے ۱؎ (مسلم،بخاری) شرح ۱؎ کیونکہ اس […]

مکمل تحریر پڑھیے »


أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ وَلَا تَحۡسَبَنَّ الَّذِيۡنَ قُتِلُوۡا فِىۡ سَبِيۡلِ اللّٰهِ اَمۡوَاتًا ‌ؕ بَلۡ اَحۡيَآءٌ عِنۡدَ رَبِّهِمۡ يُرۡزَقُوۡنَۙ ترجمہ: اور جو لوگ اللہ کی راہ میں قتل کردیے گئے ان کو مردہ نہ سمجھو بلکہ وہ اپنے رب کے نزدیک زندہ ہیں انھیں رزق دیا جا رہا ہے تفسیر: مناسبت اور […]

مکمل تحریر پڑھیے »


ٹیگز:- , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , , ,