اِنَّ الَّذِيۡنَ اٰمَنُوۡا وَعَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ لَهُمۡ اَجۡرٌ غَيۡرُ مَمۡنُوۡنٍ۞- سورۃ نمبر 41 فصلت آیت نمبر 8
sulemansubhani نے Wednesday، 23 June 2021 کو شائع کیا.

أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ

اِنَّ الَّذِيۡنَ اٰمَنُوۡا وَعَمِلُوا الصّٰلِحٰتِ لَهُمۡ اَجۡرٌ غَيۡرُ مَمۡنُوۡنٍ۞

ترجمہ:

بیشک جو لوگ ایمان لائے اور انہوں نے نیک عمل کیے ان کے لیے ایسا اجر ہے جو ختم نہیں ہوگا

مومن کی صحت کے ایام کے نیک اعمال کا سلسلہ مرض اور سفر میں بھی منقطع نہیں ہوتا

حٰم ٓ السجۃ : ٨ میں فرمایا : ” بیشک جو لوگ ایمان لائے اور انہوں نے نیک عمل کیے ان کے لیے ایسا اجر ہے جو کبھی ختم نہیں ہوگا۔ “

اس سے پہلی آیت میں کافروں کی وعید بیان فرمائی تھی اور اس آیت میں مؤمنوں کے اجروثواب کا ذکر فرمایا ہے، مومن صحت کے ایام میں جو نیک عمل کرتا ہے اگر وہ مرض یا سفر کی وجہ سے وہ نیک عمل نہ کرسکے، اللہ تعالیٰ اس کو مرض اور سفر کے ایام میں بھی ان نیک اعمال کا اجر عطا فرماتا رہتا ہے اور اس کے اجر کا سلسلہ منقطع نہیں ہوتا، اس پر حسب ذیل احادیث میں دلیل ہے :

حضرت عقبہ بن عامر (رض) بیان کرتے ہیں کہ نبی (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا : جس شخص کے جسم میں کوئی بیماری ہوجائے تو اللہ تعالیٰ اس کے اعمال کی حفاظت کرنے والے فرشتوں سے فرماتا ہے : میرا بندہ جو نیک عمل کرتا تھا، اس کے صحیفہ اعمال میں ہر روز وہ عمل لکھتے رہو۔ (مسند احمد ج ٤ ص ١٤٦، المعجم الکبیر ج ١٧ ص ٢٨٤)

نیز حضرت عقبہ بن عامر (رض) بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا : جب بندہ کسی اچھے طریقے سے عبادت کررہا ہو پھر وہ بیمار ہوجائے تو جو فرشتہ اس پر مامور ہے اس سے کہا جاتا ہے کہ یہ تندرستی کے ایام میں جو عمل کرتا تھا اس کا وہ عمل لکھتے رہو حتیٰ کہ وہ تندرست ہوجائے۔ (مسند احمد رقم الحدیث : ٦٨٩٥، حافظ الہیثمی نے کہا : اس حدیث کی سند صحیح ہے، مجمع الزوائد ج ٢ ص ٣٠٣)

عون بن عبداللہ اپنے والد سے اور وہ اپنے دادا (رض) سے روایت کرتے ہیں کہ رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا : مومن اور اس کی بیماری پر بےقراری تعجب خیز ہے، اگر اس کو معلوم ہوجائے کہ اس کی بیماری میں کتنا اجر ہے تو وہ چاہے گا کہ وہ تاحیات بیمار ہی رہے، پھر رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) آسمان کی طرف سر اٹھا کر ہنسنے لگے، آپ سے پوچھا گیا کہ آپ کس وجہ سے آسمان کی طرف دیکھ کر ہنسے ؟ تو رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا : مجھے دو فرشتوں کو دیکھ کر تعجب ہوا، وہ ایک جائے نماز میں اس کی نمازی کو ڈھونڈ رہے تھے، اس جگہ وہ نمازی نہیں ملا تو وہ واپس چلے گئے، پھر انہوں نے عرض کیا : اے ہمارے رب ! ہم تیرے فلاں بندہ کا نیک عمل دن رات لکھتے تھے، اب ہم کو معلوم ہوا تو نے اس کو اپنی (تقدیر) رسی سے باندھ لیا ہے، اللہ تعالیٰ نے فرمایا : تم میرے بندہ کے اسی عمل کو لکھتے رہو جو وہ دن رات کیا کرتا تھا اور اس میں کوئی کمی نہ کرو اور میں نے جتنے ایام اس کو روک لیا ہے ان ایام کا اجر میرے ذمہ ہے اور جو عمل وہ کیا کرتا تھا اس کا اجر اس کو ملتا رہے گا۔ (المعجم الاوسط رقم الحدیث : ٢٣١٧، دارالکتب العلمیہ، بیروت، ١٤٢٠ ھ، مسند البزار ج ٢ ص ٣٦٥، مجمع الزوائد ج ٢ ص ٣٠٧، اس حدیث کی سندضعیف ہے)

حضرت ابوموسیٰ (رض) بیان کرتے ہیں کہ رسول اللہ (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے فرمایا : جب کوئی بندہ بیمار ہوجائے یا کسی سفر پر جائے تو اس کو اس کے ان نیک اعمال کا اجر ملتا رہے گا جو وہ صحت کے ایام میں حالت اقامت میں کیا کرتا تھا۔ (صحیح البخاری رقم الحدیث : ٢٩٩٦، سنن ابودائود رقم الحدیث : ٣٠٩١، مسند احمد رقم الحدیث : ١٩٩١٥، مصنف عبدالرزاق رقم الحدیث : ٥٣٤)

القرآن – سورۃ نمبر 41 فصلت آیت نمبر 8


الَّذِيۡنَ لَا يُؤۡتُوۡنَ الزَّكٰوةَ وَهُمۡ بِالۡاٰخِرَةِ هُمۡ كٰفِرُوۡنَ ۞- سورۃ نمبر 41 فصلت آیت نمبر 7
sulemansubhani نے Wednesday، 23 June 2021 کو شائع کیا.

أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ الَّذِيۡنَ لَا يُؤۡتُوۡنَ الزَّكٰوةَ وَهُمۡ بِالۡاٰخِرَةِ هُمۡ كٰفِرُوۡنَ ۞ ترجمہ: جو زکوٰۃ (خیرات) ادا نہیں کرتے اور آخرت کا انکار کرنے والے ہیں زکوٰۃ نہ دینے پر مشرکین کی مذمت کی توجیہ حٰم ٓ السجدۃ ٧۔ ٦ میں فرمایا : ” اور مشرکین کے لیے ہلاکت […]

مکمل تحریر پڑھیے »


قُلۡ اِنَّمَاۤ اَنَا بَشَرٌ مِّثۡلُكُمۡ يُوۡحٰٓى اِلَىَّ اَنَّمَاۤ اِلٰهُكُمۡ اِلٰـهٌ وَّاحِدٌ فَاسۡتَقِيۡمُوۡۤا اِلَيۡهِ وَاسۡتَغۡفِرُوۡهُ‌ ؕ وَوَيۡلٌ لِّلۡمُشۡرِكِيۡنَ ۞- سورۃ نمبر 41 فصلت آیت نمبر 6
sulemansubhani نے Wednesday، 23 June 2021 کو شائع کیا.

أَعـوذُ بِاللهِ مِنَ الشَّيْـطانِ الرَّجيـم بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ قُلۡ اِنَّمَاۤ اَنَا بَشَرٌ مِّثۡلُكُمۡ يُوۡحٰٓى اِلَىَّ اَنَّمَاۤ اِلٰهُكُمۡ اِلٰـهٌ وَّاحِدٌ فَاسۡتَقِيۡمُوۡۤا اِلَيۡهِ وَاسۡتَغۡفِرُوۡهُ‌ ؕ وَوَيۡلٌ لِّلۡمُشۡرِكِيۡنَ ۞ ترجمہ: آپ کہیے میں محض تمہاری مثل بشر ہوں، میری طرف یہ وحی کی جاتی ہے کہ بیشک تمہارا معبود واحد معبود ہے، تم اسی کی طرف مستقیم […]

مکمل تحریر پڑھیے »


ذریعہ سے ہدایت
sulemansubhani نے Wednesday، 23 June 2021 کو شائع کیا.

۲۴۸۔ عن أبی رافع ر ضی اللہ تعا لیٰ عنہ قال: قال النبی صلی اللہ تعالی علیہ وسلم : لَاَنْ یَّھْدِی اللّٰہُ عَزَّوَجَلّ عَلیٰ یَدِکَ رَجُلاً خَیْرٌ لَّکَ مِمَّا طَلَعَتْ عَلِیْہِ الشَّمْسُ وَغَرَبَتْ ۔ حضرت ابو رافع رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ نبی اکرم صلی اللہ تعالیٰ علیہ وسلم نے ارشاد فرمایا […]

مکمل تحریر پڑھیے »


ٹیگز:-
شبِ معراج النبی ﷺ
sulemansubhani نے Wednesday، 23 June 2021 کو شائع کیا.

{شبِ معراج النبی ﷺ} القرآن : ترجمہ: اُنہیں اللہ تعالیٰ کے دن یاد دلاؤ۔(سورۃ ابراہیم) اس آیت کی تفسیر میں صدر الافاضل سید محمد نعیم الدین مراد آبادی علیہ الرحمہ فرماتے ہیں ، ان ایّام میں سب سے بڑی عظمت کے دن میلا د النبی اورشبِ معراج ہے اس کے علاوہ اولیاء کرام کے ایام […]

مکمل تحریر پڑھیے »


باب اعتقادیات کے مشاہیر ائمۂ کرام
sulemansubhani نے Wednesday، 23 June 2021 کو شائع کیا.
ہمارے اسلاف اور مطالعہ کتب
sulemansubhani نے Wednesday، 23 June 2021 کو شائع کیا.
متحد ہو تو بدل ڈالو زمانے کا نظام
sulemansubhani نے Wednesday، 23 June 2021 کو شائع کیا.
موسیقی اور جاوید احمد غامدی
sulemansubhani نے Tuesday، 22 June 2021 کو شائع کیا.
آواز دو انصاف کو، انصاف کہاں ہے؟
sulemansubhani نے Tuesday، 22 June 2021 کو شائع کیا.